گاڑیوں کے ٹائرز کو کن اجزا سے تیار کیا جاتا ہے

دوستو آج میں آپ  کوگاری کے چند اہم ترین حصوں میں سے ایک یعنی کہ ٹائرز کےبارے میں بات  کریں گے گاڑی کے ٹائرز کو تیار کرتے وقت 10سے 15 مختلف اجزا سے ملکر بنتا ہے، ربڑ ،کپڑے اور اسٹیل کے کئی تاروں کو مختلف مراحل سے گزارا جاتا ہے  پھر کہیں جا کر ایک ٹائر بنتا ہے اس کے علاوہ ٹائر کے بھی مختلف حصے ہوتے ہیں جو علحیدہ علحیدہ تیار کئیے جاتے ہیں مثلا ٹائر کا اندرونی حصہ ,اس پر بنے ہوئے ٹریڈ  اور دائیں بائیں موجود دیواریں  بنانے اور جوڑنے کا ایک مفصل طریقہ ہے، میں اس طریقے کار میں آپکو الجھانا  نہیں چاہتا اور یہاں صرف اجزا کے متعلق بتاوں گا جو ٹائر کو تیار کرتے وقت اسعمال کی جاتی ہیں  تاکہ جب آپ اپنی گاڑی یا موٹرسائکل کا ٹائر خریدیں تو مختلف اصطلاحات کو بہتر انداز میں سمجھ سکیں،

                                                                 ٹریڈ (Tread)

یہ ٹائر کا وہ حصہ ہے جو ہمہ وقت سڑک سے جڑا رہتاہے،اس کے اوپر مختلف طرح کے نقش و نگار بنے ہوئے ہوتے ہیں یہ حصہ دوران سفر ڈرائیور کو گاڑی پر گرفت مظبوط رکھنے میں مدد فراہم کرتا ہے اور برسات کے موسم میں یہ پانی کے اخراج میں بھی معاون ثابت ہوتا ہے اور اگر آپ کے پاس خوش قسمتی سے ایسے ٹائرز ہیں  جن پر مظبوط ربڑ کااستعمال کیا گیا ہو توآپ کیچڑ میں بھی گاڑی کو آسانی سے چلا سکتے ہیں ۔ ٹائر کے ٹریڈ جتنے ہموار ہوں گے اتنے ہی بغیر کسی لرزش سے چلتے رہیں گے ۔ اس کے علاوہ یہ گاڑی کے تیز رفتاری کے وقت آوازیں بھی نہیں دیتے ۔ 

(Bead)  بیڈ 

بیڈ کا کام ٹائر اور پہیے کے درمیان کا کام ٹائر اور پہیے کے درمیان تعلق کو برقرار رکھنا ہے ۔ بیڈ میں اسٹیل کا استعمال  کیا جاتا ہے 

تاکہ اس کی شکل برقرار رہے اور کسی قسم کا دباو پڑنے پر اپنی ئئیت تبدیل نہ کرے جب ٹائر اور ٹیوب میں ہوا بھری جاتی ہے تو  یہی بیڈ والا حصہ ربڑ کی مدد سے پہیے سے چپکا رھتا ہے تاکہ ہوا کے اخراج اور اور ٹائر کو پسلنے سے محفوظرکھا جا سکے۔ برق رفتار گاڑیوں میں اس حصے کو پہیے سے  باقاعدہ جوڑ دیا جاتا ہے تاکہ وہ کسی بھی صورٹ حال میں پہیے سے الگ نہ ہوسکے

                                                  سائیڈ وال

سائیڈ وال ٹائر کے دائیں اور بائیں جانے موجود حصہ کو کہا جاتا ہے  یہ لچک دار حصہ ٹائت کے ٹریڈ اور بیڈ کو ملاتا ہے اسے گاڑی کے پہیے اور معیار کی کارگردگی کی وجہ سے بہت اہمیت حاصل ہے  دوران سفر موڑ کاٹتے ہوئے اس پر سب سے زیادہ دباو پڑتا ہے اگر آپ دائیں جانب گاڑی موڑ رہے ہیں تو بائیں سائیڈوال پر دباو پڑتا ہے اور بائیں جانب گاڑی موڑتے ہوئے  دائیں سائیڈوال پر دباو پڑتا ہے سفر کے دوران اونچے نیچے  راستوں سے گزرتے ہوئے یہ حصہ گاڑی کع ایک خاص حالت میں رکھتا ھے تاکہ مسافروں کو زیادہ تکلیف کا سامنا نہ کرنا پڑے – غیرمعیاری ٹائر کے اس حصہ میں لچک کم ہوتی ہے اور ہوا کا غیر مناسب دباو اس کے حصے کو نقصان پہنچا سکتا ہے-

                                             کارکس

اصل میں کارکس ٹائر کا ایک ڈھانچہ ہوتا ہے جو دیگر اجزا کو آپس میں جوڑے رکھتا ہے- ٹائت کی ٹریڈ کو ایک خاص طریقے سے پھگلا کر کارکس سے جوڑ دیا جاتا ہے – اسے مختلف اجزا سے تیار کیا جاتا ہے – ریڈیئل ٹائر میں اسٹیل کے تار بھی استعمال کئیے جاتے ہیں  یہ تار ایک بیڈ سے دوسرے بیڈ کو جوڑتی ہے -البتہ یہ سمتی ٹائر میں کپڑے اور شیشے کے تار بھی استعمال کئیے جاتے ہیں –

                                                 دوستو یہ وہ چند باتیں تھیں جو گاڑیوں کے شوقین حضرات کی معلومات میں اضافہ کرنے کیلئے میں نے آپکو بتائیں اچھا ٹائر ڈرئیور اور گاڑی کی حفاظت اور سہولیات کی اہمیت کا حامل ہیں

Please follow and like us:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *